سیاسی ومسلکی تعصبات سے بالا خواتین اور بچوں کی تعلیم وتربیت کےلیے آن لائن منفرد ادارہ

فاؤنڈیشن ویب سائٹس

اس ترقیاتی اورخاص طور الکیٹرانک میڈیا دور میں جہاں اور ہر طرح کی ترقی ہوئی، وہاں تعلیم وتعلم کے طریق میں بھی بہت بدلاؤ آیا، جس میں ایک ’’ آنلائن ایجوکیشن سسٹم‘‘ بہت کامیابی کے ساتھ سفر کررہا ہے۔ آنلائن ایجوکیشن سسٹم ایک ایسا محفوظ، مضبوط اور مفید سلسلہ ہے جس میں انسان گھربیٹھے، آفس بیٹھے اور اسی طرح اپنی دیگر مصروفیات کے ساتھ ساتھ اپنی مرضی کے ٹائم کے ’’ تعلیم وتعلم ‘‘ کا سلسلہ شروع کررہا ہوتا ہے۔

آنلائن اس سہولیاتی تعلیم کو دیکھا جائے تو دنیاوی تعلیم کا سلسلہ جہاں بڑھا، وہاں دینی تعلیم کو بھی آنلائن عام کیا جانے لگا۔ جس میں علمائے دین اور معلمات دین نے اپنی بھرپورعلمی، مالی اور انتظامی ذمہ داریاں نبھائیں، اور نبھا بھی رہی ہیں۔ لیکن اگرہم غور کریں تو آنلائن تعلیم وتعلیم میں ہمیں  مرد اور خواتین میں فرق نظر آتا ہے۔ مختصر یہ کہ انٹرنیٹ پرایسی ڈھیروں ویب سائٹس ہیں، جن پرمردوں یا پھر مردو خواتین دونوں سے متعلقہ مواد اپلوڈ کیا گیا ہے۔ لیکن خاص ایسی ویب سائٹس نہیں ہیں، جن پرصرف اور صرف خواتین اور بچوں سے متعلقہ ہر طرح کا علمی، اصلاحی، تربیتی  اور معاشرتی رہنمائی سے متعلق مواد پیش ہو۔(الا قلیل)

اس کمی کو پورا کرنے کےلیے تعلیم النسآء فاؤنڈیشن، پاکستان کی ٹیم نے فیصلہ کیا ہے کہ تعلیم النسآء فاؤنڈیشن، پاکستان کے زیرانتظام کچھ ایسی ویب سائٹس کا قیام عمل میں لایا جائے، جن پرخواتین ہی خواتین کی آن لائن ہرطرح کی  تربیت واصلاح کے ساتھ تعلیم وتعلم کا فریضہ سرانجام دینے میں کوشاں ہوں، اور جن ویب سائٹس پرصرف بچوں اور خواتین سے متعلقہ ہرطرح کا اصلاحی وتربیتی مواد اپلوڈڈ ہو۔الحمدللہ تعلیم النسآء فاؤنڈیشن کے تحت ایسی ویب سائٹس قائم کی گئی ہیں۔جس کی مختصر تفصیل آپ کے سامنے پیش کی جاتی ہے۔


’’ تعلیم النسآء فاؤنڈیشن ویب سائٹ ‘‘

تعلیم النسآء فاؤنڈیشن کے زیراہتمام چلنے والی اس سائٹ پر جہاں تعلیم النسآء فاؤنڈیشن، پاکستان کا تعارف، اغراض ومقاصد اور دیگرضروری معلومات فراہم کی گئی ہیں، اور کی جاتی رہیں گی ان شاءاللہ۔ وہاں پرتعلیم نسواں کی اہمیت اور ضرورت سے متعلقہ مواد بھی پیش کیا گیا ہے۔تاکہ اس شعور کو بیدار کیا جاسکے کہ جیسے  مرد حضرات کی تعلیم ضروری ہے، اسی طرح خواتین کی تعلیم بھی ضروری ہے۔ اور اسلام نے تعلیم کے میدان میں خواتین اور مرد کو ایک ہی کیٹگری میں رکھا ہے۔

ویب سائٹ کا لنک


’’ خواتین کانٹینٹ انسائیکلوپیڈیا ‘‘

ٹیم تعلیم النسآء فاؤنڈیشن پاکستان کی کاوش سے ایک ایسی ویب سائٹ کا بھی اجراء کردیا گیا ہے جس پرخواتین اور بچوں سے متعلقہ ہرطرح کا مواد مختلف فارمیٹ میں اپلوڈ کیا جارہا ہے۔جس کے ذریعے دینی اصول، قواعد وضوابط اور حدود وقیود میں رہتے ہوئے جہاں دنیاوی تربیت حاصل کی جاسکے گی، وہاں دینی اصلاح وتعلیم کے بھی بہت سارے ذرائع موجود ہونگے۔ اور ان شاءاللہ اس ویب سائٹ پراب تک خواتین اور بچوں کے موضوعات پر لکھی گئیں جتنی بھی بکس، شمارے یا اسی طرح خواتین سے متعلقہ ویڈیوز ،آڈیوز ہیں وغیرہ وغیرہ۔ وہ سب اپلوڈ کی جائیں گی۔مختصر یہ کہ یہ ویب سائٹ خواتین اور بچوں کے موادکے حوالے سے ایک انسائیکلوپیڈیا کی حیثیت رکھے گی۔

ویب سائٹ کا لنک


خواتین سوالات جوابات

فاؤنڈیشن کے تحت ایک ایسی آنلائن فتویٰ سائٹ کا اجراء کیا گیا ہے، جس پرصرف اور صرف خواتین اور بچوں سے متعلقہ دینی، دنیاوی، ومعاشرتی الغرض ہرطرح کے سوالات اور پھر قرآن وحدیث کی روشنی میں ان کے جوابات شامل کیے جارہے ہیں،اور باقاعدہ اہل علم خواتین کی ایک ٹیم اس پر کام کررہی ہے۔ الحمدللہ

ویب سائٹ کا لنک


ڈسکیشن فورم

تعلیم النسآء فاؤنڈیشن پاکستان نے جہاں خواتین کو علمی پلیٹ فارم مہیا کیے ، وہاں پر اپنے علم کو سکھانےاور پھردوسری خواتین کے ساتھ بات چیت کرنے کے حوالے سے بھی ایک پلیٹ فارم قائم کردیا ہے۔کیونکہ آپ کو اچھی طرح علم ہوگا کہ خواتین کو گپ شپ کرنے کی عادت اور پھر ضرورت بھی ہوتی ہے۔ اور خواتین اپنی اس عادت کو فیس بک ودیگر ایپلی کیشنز وغیرہ پر پورا کرتی نظرآتی ہیں۔تعلیم النسآء فاؤنڈیشن کے زیراہتمام ایک ایسا آنلائن اسلامک طرز پر ڈسکیشن سینٹر قائم کیا گیا ہے،جس میں صرف اور صرف خواتین شامل ہوسکیں گی، اور خواتین ہی ایک دوسرے کے ساتھ جہاں دین ودنیا کی باتیں کرسکیں گی، دینی تعلیم اور دنیاوی تعلیم سکھا اور بتا سکیں گی۔ وہاں اسلامک آنلائن ماحول میں دوسری خواتین سے بات چیت بھی کرتی رہیں گی۔ ان شاءاللہ

ویب سائٹ کا لنک


آنلائن رشتہ سنٹر

رشتوں کی حوالے سے والدین کو جو اور جس طرح کی پریشانی کا سامنا ہوتا ہے؟ اس سے آپ بخوبی واقف ہونگی۔ اور پھر کئی لوگ آنلائن رشتہ سنٹرز اور ویب سائٹس وغیرہ چلا رہے ہیں، لیکن ان کے مالکان نے اسے مکمل کاروباری طرز پرلے لیا ہے۔ جبکہ ایک ایسا آنلائن رشتہ سنٹر ایسا ہونا چاہیے جو بالکل ہر طرح کی فیس سے آزاد خدمت خلق کے جذبے سے کام کررہا ہو۔ اور جہاں تک بھی ممکن ہو، وہ اس طریقہ سے نکاح کو آسان بنانے پربھرپورکوشش بھی کررہا ہو۔ اور ساتھ ساتھ تعاون بھی۔الحمدللہ تعلیم النسآء فاؤنڈیشن کے تحت ایسی سائٹ کا اجراء کیا گیا ہے، جس پررشتوں کے حوالے سے ہر طرح کا تعاون کیا جاتا رہے گا۔ ان شاءاللہ تعالیٰ

ویب سائٹ کا لنک


آنلائن لرننگ سسٹم

تعلیم النسآء فاؤنڈیشن کے تحت ایک ایسا آنلائن لرننگ سسٹم تیار کیا گیا ہے، جس پردینی تعلیم کے ساتھ دنیاوی تعلیم اور اسی طرح گھریلو تربیت اور اس کے ساتھ کمپیوٹروغیرہ کی بھی تعلیم دی جائے گی۔کیونکہ اب تک ایسا خاص پلیٹ فارم انٹرنیٹ پرصرف خواتین کےلیے موجود نہیں ہے، جو ایک تو صرف خواتین کےلیے ہو، یعنی اس میں خواتین کی دینی اور دنیاوی تعلیم سے متعلق ہرطرح کے کورسز موجود ہوں، اورپھر اس کے ساتھ ایسی غریب خواتین جن کے پاس ہنر ہو، تعلیم ہو اور وہ اس ہنر وتعلیم کو آگے پہنچا کراس ذریعہ سے اپنا اور اپنے بچوں کا پیٹ پالنا چاہتی ہوں، تو یہ پلیٹ فارم ان کو موقع فراہم کرے، اور اس معاملے میں ان کے ساتھ ہرطرح کا تعاون بھی کرےا۔الحمدللہ فاؤنڈیشن کی طرف سے ایسا پلیٹ فارم قائم کردیا گیا ہے، جس پرجہاں دینی وعصری تعلیم کے حوالے سے مختلف کورسز ہونگے، وہاں پرآپ بھی اپنی تعلیم اور ہنر کو دوسروں تک پہنچا سکیں گی۔ ان شاءاللہ

ویب سائٹ کا لنک


خواتین کےلیے آنلائن مدرسہ

آپ جانتی ہیں کہ خواتین چاہے شادی شدہ ہوں یا غیرشادی شدہ، دونوں کےلیے گھر سے باہر اسلامک سنٹرز میں جاکر دینی تعلیم حاصل کرنا مالی اخراجات کے ساتھ ان کےلیے دیگر کتنی ساری مشکلات کو جنم دیتا ہے۔ خواتین کو ان سارے مسائل سے بچانے کےلیے ایک ایسا آنلائن اسلامک ایجوکیشنل سسٹم کی ضرورت تھی، جس میں خواتین کو باقاعدہ دین کی تعلیم دی جائے، جس پرایک سالہ، دو سالہ، چارسالہ، مکمل درس نظامی کروایا جاتا ہو۔ اور پھرباقاعدہ سرٹیفکیٹ بھی دی جائیں۔ اور اسی طرح اگرکوئی خاتون وفاق المدارس کی تعلیم حاصل کرنا چاہتی ہو تو ان کو گھربیٹھے وفاق المدارس کے طرز پرتعلیم دلوائی جائے، اور پیپرز دینے کے بعد باقاعدہ سرٹیفکیٹ بھی دلوائی جائے۔ المختصرایک خاتون عالمہ بننا چاہتی ہو، تو مدرسہ کی چاردیواری کا رخ کرنے کے بجائے وہ گھر بیٹھے آنلائن مکمل درس نظامی کورس کرکے عالمہ کی ڈگری حاصل کرسکے، اس حوالے سے تعلیم النسآء فاؤنڈیشن پاکستان کی ٹیم نے  خواتین کےلیے ایک آنلائن مدرسہ قائم کردیا ہے۔جس پرد درس نظامی اور وفاق المدارس آنلائن پڑھایا جائے گا۔ ان شاءاللہ

ویب سائٹ کا لنک


نوٹ:

تعلیم النسآء فاؤنڈیشن پاکستان کے زیراہتمام چلنی والی ویب سائٹس اور ان کا مختصرتعارف آپ نے جان لیا ہے، جس سے آپ کو اندازہ ہوگیا ہوگا کہ خواتین کی اصلاح وتربیت کےلیے تعلیم النسآء فاؤنڈیشن انٹرنیٹ پرکس طرح کا کام کررہی ہے۔الحمدللہ

ہماری ٹیم کی کوشش ہے کہ ہم اس سارے کام کو کئی گناہ بہترسرانجام دیں، تاکہ خواتین اور بچوں کی اصلاح وتربیت کےلیے آنلائن سنٹرقائم ہوجائے۔

تعلیم النسآء فاؤنڈیشن، پاکستان

You may also like